مسلم لیگ ن برطانیہ کی کارکن لڑکی نوازشریف کے گھر کے باہر مظاہرین پر “ٹوٹ پڑی”

لندن (ویب ڈیسک) پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے پلیٹ فارم سے اپوزیشن پارٹیز پاکستان میں حکومت وقت کے خلاف سراپا احتجاج ہیں تو دوسری طرف برطانیہ میں سابق وزیراعظم اور ان کے بیٹوں کے گھروں کے باہر حکومتی پارٹی کے اراکین نے احتجاج کیا ، ایسے مٰیں کچھ لوگ باغی لیگی رکن اسمبلی جلیل احمد شرقپور کیساتھ اسمبلی میں ہونیوالے سلوک کیخلاف بھی میدان میں آگئے لیکن ان کے جواب میں مسلم لیگ برطانیہ کی کارکن بھی ٹوٹ پڑی اور پولیس کی دھمکی ملنے پر فوری بلانے کی بھی تجویز دیدی۔
سوشل میڈیا پر وائرل ہونیوالی ایک ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ کچھ نوجوان جلیل احمد شرقپوری کے پوسٹر اٹھائے “سنت رسول کی بے حرمتی نامنظور” کے نعرے لگا رہے ہیں،ان پوسٹرز پر عسکری حکام کی تصاویر بھی واضح دیکھی جاسکتی ہیں، اس دوران ایک نوجوان لڑکی بھی میدان میں آگئی اور ان کے جواب میں تالیاں بجاتے ہوئے لوٹا لوٹا کے نعرے لگانا شروع کردیئے ، اس نے پوسٹر پکڑنے کی کوشش کی تو اسے بتایا گیا کہ ہاتھ مت لگائیں، ورنہ پولیس آپ کو پکڑ لے گی ، دور رہیں ۔
اس کے جواب میں اس لڑکی کا کہناتھاکہ ٹھیک ہے ، پولیس کو ابھی کال کریں اور پھر نعرے بازی شروع کردی،ا س دوران ایک شخص اسے پکڑ کر دور لے جانے کی کوشش بھی کررہا ہے ۔

یہ خبربھی پڑھیں

عمران خان ہمیں جلسے کرنے کی اجازت دیں ، ہم ان کو بتائیں گے کہ جلسے جلوس کیا ہوتے ہیں ، خرم شیر زمان

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)پی ٹی آئی کے رہنما اوررکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان …